PDA

View Full Version : کوئی نئی چوٹ پھر سے کھاؤ اداس لوگو


shani
09-26-2009, 09:54 PM
کوئی نئی چوٹ پھر سے کھاؤ اداس لوگو !
کہا تھا کس نے کہ مسکراؤ اداس لوگو!

گزر رہی ہیں گلی سے پھر ماتمہ ہوائیں
کواڑ کھولو ، دئیے بجھاؤ ، اداس لوگو!

جو رات مقتل میں بال کھولے اتر رہی تھی
وہ رات کیسی رہی ، سناؤ اداس لوگو!

کہاں تلک بام و در چراغاں کیے رکھو گے؟
بچھڑنے والوں کو بھول جاؤ اداس لوگو!

اجاڑ جنگل ، ڈری فضا، ہانپتی ہوائیں
یہیں کہیں بستیاں بساؤ اداس لوگو!

یہ کس نے سہمی ہوئی فضا میں ہمیں پکارا؟
یہ کس نے آواز دی کہ آؤ اداس لوگو!

یہ جاں گنوانے کی رت یونہی رائیگاں نہ جائے
سرِ سناں کوئی سر سجاؤ اداس لوگو!

اسی کی باتوں سے ہی طبیعت سنبھل سکے گی
کہیں سے محسن کو ڈھونڈ لاؤ اداس لوگو!

محسن نقوی

Blue_King
09-26-2009, 10:28 PM
thanks for sharing

Saqib
09-27-2009, 05:43 PM
very nice

~ BiG*BaBa ~
11-10-2009, 09:12 PM
Khoobsoorat ...sharing :daisy4u:

blueparadise
11-11-2009, 12:52 PM
Beautiful Poetry, Nice Sharing,

Thanks for the Sharing

Keep Sharing..!!!

ShahidMubashir
04-19-2010, 02:48 PM
Thanks For Nice Sharing

esha
06-03-2010, 04:38 PM
nice
thanks for sharing

roshi
06-09-2010, 04:55 PM
Thx for nice sharing

Black Pearl
10-22-2010, 11:28 PM
Thanks Dear Good sharing Keep it up